Type Here to Get Search Results !

لہسن سے مردانہ طاقت کیسے حاصل کریں| مردانہ کمزوری کا قدرتی علاج

لہسن سے مردانہ طاقت کیسے حاصل کریں -  مردانہ کمزوری کا قدرتی علاج

لہسن سے قوت باہ کا علاج

لہسن کی جڑ سے ان لوگوں کو فائدہ ہوسکتا ہے جنہیں مباشرت کی خواہش پوری کرنے میں کسی قسم کی کمزوری کا سامنا کرنا پڑتا ہے مختلف حکما اپنی تحقیق سے ثابت کرتے ہیں کہ جنسی اعتدال کی کامیابی میں لہسن بہت ہی مفید قدرتی ٹانک ہے صرف دو تین وریاں لہسن کی ہر صبح نگل لیں اور اس کے حیران کن نتائج سے لطف اندوز ہوں

لہسن نہ صرف کثرت جماع یا عیاشی کی وجہ سے پیدا ہونے والی جنسی کمزوری اور نامردی کا بہترین علاج ہے۔ بلکہ یہ کسی بھی وجہ سے زائل ہو جانے والی جنسی طاقت کی بحالی کے لئے بھی بہترین ٹانک ہے۔ یورپ کے جنوب مشرقی حصہ میں لہسن کو تولیدی صحت کا ضامن سمجھا جاتا ہےلہسن قوت باہ بڑھانے کا اہم ذریعہ ہے، لہسن اور قوت باہ کا چولی دامن کا ساتھ ہے، مردانہ کمزوری دور کرنے کے لیے اس کا استعمال زمانہ قدیم سے جاری ہے۔ اسی لیے کہا جاتا ہے کہ لہسن اگر سونے کے بھاؤ بھی ملے تو ضرور کھاؤ، .

لہسن سے ان لوگوں کوبہت فائدہ ہوتا ہے جنہیں مباشرت کی خواہش پوری کرنے میں کسی قسم کی کمزوری کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ڈاکٹر ایچ کے باکرو اپنی تحقیق سے ثابت کرتے ہیں کہ جنسی اعتدال کی کامیابی میں لہسن بہت ہی مفید قدرتی ٹانک ہے۔ اس کا طریقہ استعمال نہایت ہی آسان ہے۔ صرف 2 سے 3 توریاں لہسن کی ہر صبح نگل لیں اور اس کے حیران کن نتائج سے لطف اندوز ہوں

لہسن ایک مقبول سبزی ہے جو صحت سے متعلق فوائد کی ایک طویل فہرست رکھتا ہے -اسے سبز اور خشک دونوں حالتوں میں استعمال کیا جاتا ہے -اس کے اجزاء میں نمکیات فولاد تانبہ اور وٹامن اے ،ایچ ،سی وغیرہ شامل ہوتے ہیں - یوں تو لہسن کے ہزارہا فوائد ہیں تاہم ہمارا موضوع بحث لہسن سے مردانہ طاقت کا حصول ہے -  کچھ مطالعات کے مطابق، لہسن سوزش سے لڑنے، کولیسٹرول کی سطح کو کم کرنے اور دائمی بیماری سے بچانے میں مدد کر سکتا ہے .

لہسن پیاز کے خاندان کی ایک قسم ہے۔ یہ عام طور پر کھانا پکانے میں مسالا کے طور پر استعمال ہوتا ہے، اور اس کا ذائقہ تیکھا  ہوتا ہے جو ڈش میں ذائقے  کا اضافہ کرتا ہے۔ لہسن کو صدیوں سے دواؤں کے طور پر بھی استعمال کیا جاتا رہا ہے، اور خیال کیا جاتا ہے کہ جب مناسب مقدار میں استعمال کیا جائے تو اسے صحت کے لیے کچھ فوائد حاصل ہوتے ہیں۔ کچھ لوگوں کا خیال ہے کہ لہسن کولیسٹرول کی سطح کو کم کرنے، بلڈ پریشر کو کم کرنے اور مدافعتی نظام کو بڑھانے میں مدد کر سکتا ہے۔ تاہم، یہ نوٹ کرنا ضروری ہے کہ صحت کے ان ممکنہ فوائد کی تصدیق کے لیے ابھی مزید تحقیق کی ضرورت ہے۔اس بات کا کوئی سائنسی ثبوت نہیں ہے کہ لہسن مردانہ کمزوری کا علاج ہے، جسے erectile dysfunction (ED) بھی کہا جاتا ہے۔ ED ایک عام حالت ہے جو مختلف عوامل کی وجہ سے ہو سکتی ہے، بشمول عمر، صحت کی بنیادی حالتیں، اور بعض دوائیں۔ جبکہ لہسن کو کچھ ممکنہ صحت کے فوائد کے لیے دکھایا گیا ہے، یہ ای ڈی کے لیے ثابت شدہ علاج نہیں ہے۔ اگر آپ ED کا تجربہ کر رہے ہیں، تو اس کی وجہ کا تعین کرنے اور علاج کے اختیارات پر تبادلہ خیال کرنے کے لیے صحت کی دیکھ بھال فراہم کرنے والے سے بات کرنا ضروری ہے۔

اس کی بہت سی خصوصیات کو دیکھتے ہوئےلوگ یہ بھی سوچ سکتے ہیں کہ آیا لہسن جنسی فعل کو بہتر بنا سکتا ہے یا جنسی خواہش کو بڑھا سکتا ہے۔ یہ مضمون اس بات کا تعین کرنے کے لیے ہے کہ آیا لہسن آپ کی جنسی خواہش کو بڑھا سکتا ہے۔یا آپ کی مردانہ طاقت کو بحال یا زیادہ کر سکتا ہے ؟

لہسن سےمردانہ طاقت
لہسن سےمردانہ طاقت

لہسن میں شامل غذائی اجزا

یونیورسٹی آف روچیسٹر میڈیکل سینٹر کے مطابق لہسن میں پروٹین، چکنائی، کاربوہائیڈریٹس، فائبر اور ضروری معدنیات جیسے آئرن، کیلشیم، پوٹاشیم، فاسفورس، پوٹاشیم اور وٹامن بی 6 اور سی شامل ہیں۔ 100 گرام لہسن کے غذائی اجزاء ذیل میں دیئے گئے ہیں۔

100 گرام لہسن کے غذائی اجز

کیلوری 149 گرام

چربی 0.5 گرام

سوڈیم 17 ملی گرام

کولیسٹرول 0 گرام

پوٹاشیم 401 ملی گرام

کاربوہائیڈریٹس - 33 گرام

غذائی ریشہ - 2.1 گرام

شکر - 33 گرام

پروٹین 6.4 گرام

وٹامن اے 0.2%

وٹامن سی 52%

آئرن 9.4%

کیلشیم 14%

لہسن کے انسانی جسم پر اثرات

کچھ تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ لہسن خون کے بہاؤ کو بڑھانے میں مدد کر سکتا ہے، جو مردوں میں عضو تناسل جیسے مسائل کے علاج کے لیے فائدہ مند ہو سکتا ہے۔

درحقیقت، متعدد انسانی اور جانوروں کے مطالعے سے معلوم ہوا ہے کہ لہسن میں پائے جانے والے بعض مرکبات خون کے بہاؤ کو بڑھا سکتے ہیں اور خون کی شریانوں کے کام کو بہتر بنا سکتے ہیں مزید یہ کہ 49 بوڑھے مردوں کے درمیان ہونے والی ایک تحقیق میں پتا چلا ہے کہ لہسن کے عرق اور مخمل اینٹلر جیسے اجزاء پر مشتمل دوائی عضو تناسل کو بہتر کرتی ہے- لہسن نائٹرک آکسائیڈ کی سطح کو بھی بڑھا سکتا ہے، یہ ایک ایسا مرکب ہے جو خون کی نالیوں کو خون کے بہتر بہاؤ کو فروغ دینے میں مدد کرتا ہے۔ یہ ممکنہ طور پر عضو تناسل کو بہتر بنانے میں مدد کرسکتا ہے .تاہم  ابھی تک خاص طور پر عضو تناسل پر لہسن کے اثرات کا جائزہ لینے کے لیے مزید تحقیقات کی ضرورت ہے۔

لہسن جنسی صحت کو بہتر بناتا ہے۔

لہسن کو مردوں کے لیے سپر فوڈ کے طور پر بڑے پیمانے پر پہچانا جاتا ہے۔ اس میں میگنیشیم، سیلینیم وغیرہ جیسے کئی غذائی اجزاء ہوتے ہیں، جو مردوں کی جنسی صحت کو بہتر بنا سکتے ہیں۔ تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ لہسن میں ایلیسن نامی مرکب ہوتا ہے جو خون کے بہاؤ کو بڑھاتا ہے۔ یہ مردوں کی طاقت کو بڑھا سکتا ہے اور ان کی جنسی خواہش کو بڑھا سکتا ہے۔ لہسن کے فوائد سے لطف اندوز ہونے کے لیے مرد ہر روز لہسن کے دو سے تین دانے کھا سکتے ہیں۔ اسے کچا کھایا جاسکتا ہے یا بھوننے کے بعد کھانے میں شامل کیا جاسکتا ہے۔

لہسن سے جنسی خواہش میں اضافہ

 لہسن مردوں میں جنسی خواہش بڑھانے میں مدد کر سکتا ہے۔ تحقیق کے مطابق لہسن ایک افروڈیزیاک کا کام کرتا ہے جو مردوں میں جنسی خواہش کو بڑھاتا ہے۔ آیوروید کے مطابق لہسن رسیان اور وجیکرن کا مرکب ہے جو جنسی خواہش کو بہتر بنانے میں مدد کرتا ہے۔ لہسن ان بوڑھے مردوں کے لیے فائدہ مند ہے جن کو لبیڈو میں کمی یا اعصابی تناؤ کا سامنا ہے۔ تحقیق یہ بھی بتاتی ہے کہ لہسن کھانے سے ٹیسٹوسٹیرون کی پیداوار میں آسانی ہوتی ہے۔ اس کے علاوہ، اگر آپ سوچ رہے ہیں کہ 'کیا لہسن مردوں میں  جنسی صلاحیت کو بڑھاتا ہے تو یہ بات سچ ہے

مردانہ طاقت کے لیے لہسن کا استعمال کیسے کریں

مرد ہر روز کچے لہسن کے تین سے چاردانے چبا سکتے ہیں۔ کچا لہسن لینے کا بہترین طریقہ دودھ یا شہد کے ساتھ پینا ہے۔ لہسن کے ایک یا دو دانوں کو کچل کر اس میں ایک چائے کا چمچ  شہد ملا لیں۔ زیادہ سے زیادہ فائدہ کے لیے اسے خالی پیٹ لیں۔

تاہم، یہ یاد رکھنا ضروری ہے کہ لہسن کھانا ایک قدرتی علاج ہے۔ یہ توقع نہ کریں کہ راتوں رات ہم سپر مین بن جائیں گے کیوں کہ ہر قدرتی چیز اپنا اثر دھیرے دھیرے دکھاتی ہے بس صبر اور مستقل مزاجی ضروری ہے ۔ اسی لیے لہسن کوروزانہ اور دو سے تین ماہ تک کھائیں تاکہ اس کے زیادہ سے زیادہ فوائد حاصل ہوں۔

احتیاطیں

کسی بھی قدرتی چیز کا ایک حد میں استعمال ہی اسے صحت کے لیے کارآمد بناتا ہے اسی طرح لہسن کے استعمال میں بھی احتیاط برتنے کی ضرورت ہے ،اسے زیادہ مقدار میں نہ کھائیں -گرم مزاج والے لوگ بھی اسے کم استعمال کریں - چونکہ اس کا مزاج گرم ہے اس لیے یہ بدن میں گرمی پیدا کرتا ہے

ہو سکتا ہے کہ آپ کو یہ بھی پسند آئے

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے
* Please Don't Spam Here. All the Comments are Reviewed by Admin.